جب استاد ہی عزت کا درندہ بن گیا پکڑے جانے پر اس نے کیا کیا

استاد کو دنیا میں سب سے زیادہ معزز سمجھا جاتا ہے کیونکہ اس کے ہاتوں میں آنے والی نسلوں کی تربیت کا دارومدار ہوتا ہے استاد ایک خام مال کو ایک قیمتی شے میں بدلتا ہے استاد کے لئے طالب علم بھی اس ہیرے کی طرح ہوتے ہیں جو کسی غار میں مل جائے جو مٹھی میں لتھڑی ہوا ہو جس کو صفائی اور پالش کی ضرورت ہو تا کہ بازار میں اس کی اچھی دام ملیں ۔ ایسے ہی استاد کے پاس آنے والے بچے خام ہیرے کی طرح ہوتے ہیں جن کو اچھی تربیت کی ضرورت ہوتی ہے جن کو اچھے اخؒاق سکھانے والا استاد چاہئے ہوتا ہے تا کہ اپنے اندر کو سنوار سکے اور اچھے اقدار و اخلاق سیکھ کر معاشرے کا با مقصد فرد بن سکے ۔

لیکن تب کیاجائے جب استاد ہی اس مقدس پیشے کی دھجیاں اڑا کر رکھ دیں ۔ جو پنی شیطانیت اور ہوس کی پیاس بجھانے کے لئے اپنے طلبا ء کا استحصال کریں ۔

ایسے ہی بزرگی کے لبادے میں لپٹے ہوئے ایک شیطان کی خبر سامنے آئی ہے جو ناروال میں استاد کی جگہ واقعہ ہے ۔ اس آدمی کے بارے اس کے طالب علموں نے شکایت کی کہ یہ آدمی بچوں کو گندی فلمیں موبائل پر دکھاتا ہے اور اس کے بعد ان کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرتا ہے بچوں کی شکایت پر والدین نے پولیس کو شکایت کی جنہوں نے موقع پر اس کو پکڑ لیا اور اس کے موبائل اور لیپ ٹاپ سے فحش فلمیں بر آمد کی

Pin It

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *