ماں کی چھاتی سے زہر آلود دودھ پیتے ہی 3 سالہ بچی ہلاک، ماں کے سینے میں زہر کہاں سے آیا؟

بھارت میں ایک تین سالہ بچی اپنی ماں کی چھاتی سے زہرآلود دودھ پینے کے باعث جاں بحق ہو گئی اور اس کی ماں کے سینے میں یہ زہرآلود دودھ آنے کا سبب ایسا ہے کہ کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست اترپردیش میں پیش آیا ہے جہاں 35سالہ خاتون سو رہی تھی کہ اسے زہریلے سانپ نے کاٹ لیا لیکن خاتون کو اس کا علم نہیں ہوا۔ اس نے بیدار ہونے پر اپنی بیٹی کو دودھ پلا دیا لیکن تب تک سانپ کا زہر خاتون کے باقی جسم کے ساتھ ساتھ اس کے دودھ میں بھی پھیل چکا تھا۔

رپورٹ کے مطابق دودھ پیتے ہی بچی کی طبیعت تو خراب ہوئی ساتھ ہی تب تک ماں پر بھی زہر کا اثر شروع ہو گیا۔ دونوں کو فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ راستے میں ہی ان دونوں کی موت واقع ہو گئی۔ پولیس انسپکٹر وجے سنگھ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ ”متوفی خاتون اور بچی کے گھر والوں نے واقعے کے بعد گھر کے دوسرے کمرے میں زہریلے سانپ کو دیکھا لیکن وہ اسے مارنے میں ناکام رہے اور سانپ فرار ہو گیا۔ “

وجے سنگھ کے مطابق ماں بیٹی کا پوسٹ مارٹم کیا جائے گا تاہم انہوں نے حادثی موت کی ایف آئی آر درج کردی ہے۔ واضح رہے کہ بھارت میں 300 قسم کے سانپ پائے جاتے ہیں جس میں 60 قسم کے سانپ انتہائی زہریلے ہوتے ہیں جن میں کوبرا، کریت، رسلز وائپر وغیرہ شامل ہیں۔ 2011 میں امریکن سوسائٹی آف ٹروپیکل میڈیسن اینڈ ہائی جین کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں ہرسال 46 ہزار افرادسانپ کے کاٹنے سے موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *